اذان واقامت میں حضور اقدس ﷺ کا ذکر آنے پر درود شریف پڑھنے کا حکم

اذان میں حضور اقدس ﷺ کا ذکر آنے پر درود شریف پڑھنے کا حکم:
بعض لوگوں کی یہ عادت ہوتی ہے کہ وہ اذان کا جواب تو نہیں دیتے بلکہ جب تشہد میں حضور اقدس حبیبِ خدا ﷺ کا نام نامی آتا ہے تو اس وقت صرف درود شریف پڑھ لیتے ہیں، واضح رہے کہ اذان میں تشہد کے جواب میں حضور اقدس ﷺ پر درود شریف پڑھنا سنت سے ثابت نہیں، اس لیے سنت، بہتر اور ثابت طریقہ یہی ہے کہ سنت کے مطابق اذان کا جواب دیا جائے اور تشہد کے جواب میں تشہد ہی پڑھا جائے، پھر جب اذان ختم ہوجائے اور اس کا جواب دے دیا جائے تو اس کے بعد درود شریف پڑھا جائے، پھر اذان کے بعد کی دعا پڑھی جائے، جیسا کہ بعض احادیث سے یہی طریقہ ثابت ہے۔
☀ صحیح مسلم میں ہے:
875- حَدَّثَنَا مُحَمَّدُ بْنُ سَلَمَةَ الْمُرَادِىُّ: حَدَّثَنَا عَبْدُ اللهِ بْنُ وَهْبٍ عَنْ حَيْوَةَ وَسَعِيدِ بْنِ أَبِى أَيُّوبَ وَغَيْرِهِمَا عَنْ كَعْبِ بْنِ عَلْقَمَةَ عَنْ عَبْدِ الرَّحْمَنِ بْنِ جُبَيْرٍ عَنْ عَبْدِ اللهِ بْنِ عَمْرِو بْنِ الْعَاصِ أَنَّهُ سَمِعَ النَّبِىَّ ﷺ يَقُولُ: «إِذَا سَمِعْتُمُ الْمُؤَذِّنَ فَقُولُوا مِثْلَ مَا يَقُولُ، ثُمَّ صَلُّوا عَلَىَّ فَإِنَّهُ مَنْ صَلَّى عَلَىَّ صَلَاةً صَلَّى اللهُ عَلَيْهِ بِهَا عَشْرًا، ثُمَّ سَلُوا اللهَ لِىَ الْوَسِيلَةَ فَإِنَّهَا مَنْزِلَةٌ فِى الْجَنَّةِ لَا تَنْبَغِى إِلَّا لِعَبْدٍ مِنْ عِبَادِ اللهِ وَأَرْجُو أَنْ أَكُونَ أَنَا هُوَ، فَمَنْ سَأَلَ لِىَ الْوَسِيلَةَ حَلَّتْ لَهُ الشَّفَاعَةُ».
(باب اسْتِحْبَابِ الْقَوْلِ مِثْلَ قَوْلِ الْمُؤَذِّنِ لِمَنْ سَمِعَهُ)

اقامت میں حضور اقدس ﷺ کا ذکر آنے پر درود شریف پڑھنے کا حکم:
یہی حال اقامت کا بھی ہے کہ بہت سے لوگ اقامت کا جواب تو نہیں دیتے بلکہ جب تشہد میں حضور اقدس ﷺ کا نام نامی آتا ہے تو اس وقت صرف درود شریف پڑھ لیتے ہیں، واضح رہے کہ اقامت میں تشہد کے جواب میں حضور اقدس ﷺ پر درود شریف پڑھنا سنت سے ثابت نہیں، اس لیے بہتر اور ثابت طریقہ یہی ہے کہ اقامت کا جواب دیا جائے اور تشہد کے جواب میں تشہد ہی پڑھا جائے۔ البتہ اگر اقامت کے بعد موقع ملے تو درود شریف پڑھ لیا جائے ورنہ تو رہنے دیا جائے۔

☀ احسن الفتاویٰ میں ہے:
’’اذان واقامت میں حضور اکرم ﷺ کے نام مبارک کے ساتھ درود شریف نہ منقول ہے اور نہ معمول، بلکہ اس کے برعکس حضور ﷺ کا ارشاد ہے کہ تم بھی وہی کلمات کہو جو مؤذن کہتا ہے، پھر اذان کے بعد پہلے درود شریف پڑھو، پھر دعا۔ انتہیٰ‘‘ (2/278)

۔۔۔ مفتی مبین الرحمٰن صاحب مدظلہ
فاضل جامعہ دار العلوم کراچی
22 محرم الحرام 1442ھ/ 11 ستمبر 2020

Leave a Reply