نماز جمعہ کے جواز کی شرائط

سوال
آجکل اکثر علاقہ جات میں جمعہ کے جواز کی شرائط نہ پائی جانے کے باوجود نماز جمعہ پڑھائی جاتی ہے ،تو آپ سے گذارش ہےکہ نماز جمعہ کے جواز کی شرائط تحریر فرمادیں جنہیں دیکھ کر ہر علاقہ والے جواز وعدم جواز کا فیصلہ کرسکے ۔

جواب
جمعہ اور عیدین کے جواز کے لئے شہر یاقریہ کبیرہ ﴿بڑا قصبہ ﴾ ہونا ضروری ہے جس کے لئے درج ذیل شرئط ہیں
١۔پختہ سڑکیں اور گلیاں ہوں
۲۔اکثر مکانات پختہ ہوں
۳۔ دورویہ دکانیں ہوں
۴۔روز مرہ ضروریات کی تمام اشیا ء مہیا ہوسکتی ہوں
جہاں یہ شرائط موجود نہ ہوں وہاں جمعہ قائم کرنا جائز نہیں ،سخت گناہ اور بہت سے مفاسد کا مجموعہ ہے ،بڑا مفسدہ یہ ہے کہ سب کی ظہر کی نماز ضائع ہوگی ۔
حوالہ جات
الدر المختار وحاشية ابن عابدين (رد المحتار) (2/ 137)
في التحفة عن أبي حنيفة أنه بلدة كبيرة فيها سكك وأسواق ولها رساتيق وفيها وال يقدر على إنصاف المظلوم من الظالم بحشمته وعلمه أو علم غيره يرجع الناس إليه فيما يقع من الحوادث وهذا هو الأصح اهـ إلا أن صاحب الهداية ترك ذكر السكك والرساتيق لأن الغالب أن الأمير والقاضي الذي شأنه القدرة على تنفيذ الأحكام وإقامة الحدود لا يكون إلا في بلد كذلك. اهـ.

ماخذ :دار الافتاء جامعۃ الرشید کراچی
فتوی نمبر :57307

Leave a Reply