نکاح کے لئے ایجاب و قبول ایک مرتبہ بھی کافی ہے

سوال
س… ایک بڑی مسجد کے قاضی صاحب جب نکاح پڑھاتے ہیں وہ ”قبول ہے“ صرف ایک مرتبہ پوچھتے ہیں، جبکہ دُوسری تمام مساجد میں تین مرتبہ قبول کرایا جاتا ہے، بہت سے مسلمانوں کا خیال ہے کہ ایک مرتبہ کہنے سے نکاح نہیں ہوتا، بلکہ تین مرتبہ ”قبول ہے“ کہنا پڑتا ہے۔

*ج… ایک مرتبہ ایجاب و قبول سے بھی نکاح ہوجاتا ہے، تین مرتبہ دہرانا محض پختگی کے خیال سے ہوتا ہوگا۔

 آپ کے مسائل اور ان کا حل جلد 5

Leave a Reply