67

ٹیسٹ کرانے لئے پیشاب کی چھوٹی بوتل جیب میں رکھی ہو، تو کیا اس سے نماز ہوجائے گی؟

اگر کسی نے ٹیسٹ کرانے لئے پیشاب کی چھوٹی بوتل جیب میں رکھی ہو، تو کیا اس سے نماز ہوجائے گی؟

جواب: واضح رہے کہ پیشاب ناپاک ہے اور ناپاک چیز جیب میں رکھ کر نماز پڑھنے سے نماز نہیں ہوتی ہے، لہذا اگر کوئی شخص ناپاک چیز جیب میں رکھ کر نماز پڑھ لے، تو اس نماز کو لوٹانا ضروری ہوگا۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
دلائل:

کما فی الدر المختار مع رد المحتار:

(وعفا) الشارع (عن قدر درهم) وان کره تحریما، فيجب غسله، وما دونه تنزيها فيسن، وفوقه
مبطل

(قوله وان کره تحريما) ……ففي المحيط: یکرہ ان یصلی و معه قدر درهم او دونه من النجاسۃ عالما به لاختلاف الناس فيه۔۔الخ

(ج: 1، ص: 316، ط: سعید)

وفی الھندیۃ:

وفی النصاب رجل صلی وفي كمه قارورة فيها بول لا تجوز الصلاة سواء كانت ممتلئة اولم تكن لان هذا ليس في مظانه و معدنه

(ج: 1، ص: 62، ط: رشیدیۃ)

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص، کراچی

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں