6

کیاداڑھی منڈااذان پڑھ سکتا ہے؟

سوال
اگر کسی کی داڑھی نہ ہو تو وہ اذان پڑھ سکتا ہے؟

جواب
داڑھی کاٹنا موجبِ فسق ہے، ایسے آدمی کی اذان اور اقامت مکروہِ تحریمی ہے۔ لہذا داڑھی والے لوگوں کی موجودگی میں یہ شخص اذان و اقامت نہ کہے۔فتاوی ہندیہ میں ہے:

’’ وینبغی أن یکون المؤذن رجلاً عاقلاً صالحاً تقیاً عالماً بالسنة. کذافي النهایة. ‘‘( الفتاوى الهندية، ۵۳ / ۱)
’’ ویکره أذان الفاسق ولایعاد. هکذافي الذخیرة. ‘‘ (الفتاوى الهندية، ۵۴ / ۱ )فقط واللہ اعلم

ماخذ :دار الافتاء جامعۃ العلوم الاسلامیۃ بنوری ٹاؤن
فتوی نمبر :144012200443

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں