106

کیا عیسائی کے فوت ہونے پر دعاۓ مغفرت کی جا سکتی ہے؟

سوال
کیا عیسائی کے فوت ہونے پر دعاۓ مغفرت کی جا سکتی ہے؟

جواب
کسی غیر مسلم کے انتقال کے بعد اُس کے لیے مغفرت کی دعا کرنا جائز نہیں ہے۔ اللہ تعالی کا ارشاد ہے :

{ مَا کَانَ لِلنَّبِیِّ وَالَّذِینَ آمَنُوا أَنْ یَسْتَغْفِرُوا لِلْمُشْرِکِینَ وَلَوْ کَانُوا أُولِی قُرْبَی} [التوبة]

ترجمہ: نبی (ﷺ) اور ایمان والوں کے لیے روا نہیں کہ وہ دعائے مغفرت کریں مشرکین کے لیے اگرچہ وہ ان کے قریبی رشتہ دار ہوں۔ فقط واللہ اعلم

فتوی نمبر : 144008200827

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں